شہباز شریف کی طرح ڈھول نہیں پیٹا دو ماہ میں سال جتنا کام کر دکھایا، چوہدری پرویز الٰہی

Published: 18-11-2022

Cinque Terre

لاہور(نمائندہ ڈاک)وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی نے  55 ہزار سے زائد سیلاب متاثرین کیلئے امدادی رقم کے اجراء کا آغاز کر دیا۔ وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی نے سیلاب متاثرین میں امدادی رقوم تقسیم کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 2 ماہ کی قلیل مدت میں ہم نے ایک سال جتنا کام کرکے دکھا دیا، لیکن شہباز شریف کی طرح ڈھول نہیں پیٹا، پچھلی دفعہ بھی اللہ نے موقع دیا تھا تو کام کر کے دکھایا تھا، ہمارے کاموں سے عام آدمی کو فائدہ ہوگا، عمران خان کے پاس سندھ کیلئے ایک ارب روپے کا چیک ہے، سندھ نے ابھی تک سروے نہیں کیا، امدادی رقم ایسے دی تو پتہ ہی نہیں چلنا، عمران خان اور ہم نے مل کر ٹیلی تھون کی تو مثالی فنڈ ملے، کسی اور نے ٹیلی تھون کی جرأت نہیں پتہ تھا عوام نے انہیں کچھ نہیں دینا، شہباز شریف کو پروٹوکول کا بہت شوق ہے، سیلاب متاثرین کے پاس فوٹوکھینچوا کے واپس آگیا، شہباز شریف کے ہاتھ بڑی ”برکت“ والے ہیں شہباز شریف جس سے ہاتھ ملاتے ہیں وہ افسر چلا جاتا ہے۔ کیا فائدہ آپ کی حکومت کا اگر صوبے کی مدد نہیں کرنا یا کوئی اچھا افسر نہیں دینا۔ وزیراعلیٰ چودھری پرویزالٰہی نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مزید کہا کہ55 ہزار 400سیلاب متاثرین کو مجموعی طور پر 12 ارب 20 کروڑ روپے کی امداد دے رہے ہیں۔ سیلاب میں تباہ ہونے والے47 ہزار 500 کچے گھر کے مالکان کو 2 لاکھ روپے اور 8 ہزار پکے گھر مالکان کو 4 لاکھ روپے فی کس دے رہے ہیں۔ اخوت کے علاوہ دیگر دینی این جی اوز نے بھی سیلاب متاثرین کیلئے قابل قدر کام کیا۔ پاکستان آرمی، نیوی اور ائیرفورس نے متاثرین سیلاب کیلئے قابل قدر کام سرانجام دیا۔ انہوں نے کہا کہ میں نے خود ڈی جی خان کے علاقوں میں جا کر صورتحال کا جائزہ لیا۔ لوگوں کے ہزاروں مکان، مساجد اور سکول بہہ گئے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ سیلاب متاثرین کی مدد کے پروگرام میں معاونت کرنیوالے تمام افسروں کی کاوشیں قابل تحسین ہیں۔ ثانیہ نشتر نے 2 ماہ میں ڈسٹری بیوشن کا شاندار سسٹم وضع کیا۔ متاثرین کی امداد کے پروگرام کی شفافیت بے مثال ہے، پورا ریکارڈ پی ڈی ایم اے سسٹم پر موجود ہے۔ ورلڈ بینک، ایشین ڈویلپمنٹ بینک اور سفیروں نے بھی ا مدادی پروگرام کی تعریف کی۔ انہوں نے کہا کہ احساس پروگرام عمران خان کا پودا ہے جو درخت بننے جا رہا ہے۔ بے بس لوگو ں کی مدد کے کام سے دوسروں کاموں میں برکت ہوتی ہے۔ وزیراعلیٰ پرویزالٰہی نے کہا کہ 3 ماہ میں سال جتنا کام کرکے دکھا دیا جس سے عام آدمی کو فائدہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ بچوں کو پہلے بھی مفت تعلیم اور کتابیں دیں، اب بھی گریجوایشن تک مفت تعلیم دے رہے ہیں۔ جنوبی پنجا ب کی طالبات کو پہلے سے تین گنا زیادہ وظیفہ دیں گے۔ عمران خان اور ہم نے مل کر ٹیلی تھون کی تو مثالی فنڈ ملے۔ کسی اور نے ٹیلی تھون کی جرأت نہیں کیونکہ پتہ تھا عوام نے انہیں کچھ نہیں دینا۔ عمران خان کے پاس سندھ کیلئے ایک ارب روپے کا چیک ہے، انہو ں نے ابھی تک سروے نہیں کیا۔ امدادی رقم ایسے سندھ کو دی تو اس کا پتہ ہی نہیں چلنا۔ وزیراعلیٰ نے مزید کہا کہ پتہ نہیں کتنے دن ہیں، لیکن جتنے دن بھی رہیں گے عوام کی خدمت کریں گے۔ اللہ تعالیٰ نیت دیکھ کر اجر دیتا ہے۔ ہر روز جائزہ لیتا ہوں کہ آج میں نے عوام کیلئے کیا کیا۔ جو کام رہ جاتے ہیں وہ اگلے دن کرنے کی کوشش کرتا ہوں۔ ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے کہا کہ احساس پروگرام میں کرپشن روکنا سب سے بڑا چیلنج تھا۔ ماضی میں سوشل پروٹیکشن ڈیٹا سیاسی بنیادوں پر مرتب کیا جاتا تھا۔ ڈیٹا انٹری میں اقربا پروری اور سیاسی تعصب کا خاتمہ کر دیا۔ سیلاب متاثرین کیلئے ہر ادائیگی کا سی سی ٹی وی کیمرے کے ذریعے ریکارڈ رکھا جائے گا۔ چیف سیکرٹری عبداللہ خان سنبل نے کہا کہ اجتماعی کاوش سے امداد کا مربوط اور شفاف میکانزم مرتب کیا گیا ہے۔ وزیراعلیٰ چودھری پرویز الٰہی نے پنجاب بینک کے خصوصی کاؤنٹر پر جا کرامدادی رقوم کی ادائیگی کے پروگرام کا باقاعدہ آغازکیااور تونسہ، جام پور، کوٹ چٹھہ، راجن پور، روجھان کے متاثرین کو امدادی رقوم دیں۔ وزیراعلیٰ چودھری پرویز الٰہی نے امدادی پروگرام میں عمدہ کارکردگی پر کمشنر ڈی جی خان لیاقت چٹھہ، ڈپٹی کمشنر، اے سی اور دیگر افسروں کو شیلڈیں دیں۔ صوبائی وزراء ڈاکٹر یاسمین راشد، میاں اسلم اقبال، سردار حسنین بہادر دریشک، محسن لغاری، عمر سرفراز چیمہ، ارکان اسمبلی حافظ عمار یاسر، پی ٹی آئی رہنما جمشید چیمہ، سیکرٹریز اور دیگر حکام بھی اس موقع پر موجود تھے۔

آج کا اخبار
Wait..! Newspaper05-12-2022 will be Update soon!.
اشتہارات